یوم عاشورہ کی فضیلت

760
0
Share:

محرم الحرام کی 10 تاریخ کو یوم عاشورہ کہتے ہیں۔ اس دن اطاعتِ خداوندی بجا لانے والوں کو حق تعالیٰ بہت بلند مقام سے نوازتا ہے۔ علماء کرام فرماتے ہیں کہ عاشورہ کو عاشورہ اس لئے کہتے ہیں کہ اللہ تعالیٰ نے اس دن دس انبیاء کرام کو دس اعزاز عطا فرمائے۔ حضرت آدم علیہ السلام کی توبہ قبول فرمائی۔ حضرت ادریس علیہ السلام کو بلند مکان پر اٹھایا۔ حضرت نوح علیہ السلام کی کشتی جو دی پہاڑ پر ٹھہر گئی۔ حضرت ابراہیم علیہ السلام کو پیدا فرمایا۔ اسی دن ان کو نارِ نمرود سے نجات عطا فرمائی۔ حضرت داؤد علیہ السلام کی توبہ قبول فرمائی، حضرت سلیمان علیہ السلام کی بادشاہی ان کو لوٹا دی، حضرت ایوب علیہ السلام کی بیماری دور کردی، حضرت موسیٰ علیہ السلام کو دریا سے نجات دی اور فرعون کو دریا میں غرق کیا۔ حضرت یونس علیہ السلام کو مچھلی کے پیٹ سے باہر نکالا۔ حضرت عیسیٰ علیہ السلام کو اسی دن آسمان پر اٹھایا، اسی دن قیامت برپا ہوگی اور آقاعلیہ الصلوۃ والسلام کو مقام محمود عطا فرمایا جائے گا۔

عاشورہ کے دن کئے جانے والے دس اعمال ایسے ہیں جو اللہ تعالیٰ کے قرب کاباعث ہیں۔

1۔ روزہ رکھنا 2۔ نفلی عبادت کرنا 3۔ یتیم کے سرپر ہاتھ رکھنا 4۔ توبہ و استغفار کرنا (قبرستان جانا)

5۔ غسل کرنا 6۔ سرمہ لگانا 7۔ بیمار کی بیمار پرسی کرنا 8۔ پیاسے کو پانی پلانا 9۔ صدقہ و خیرات کرنا 10۔ دسترخواں کشادہ کرنا

( غینۃ الطالبین )

Share: