سوال : وقوفِ عرفات کی طرف روانگی کا وقت کیا ہے؟

457
0
Share:

جواب : وقوف عرفات کی طرف روانگی کا وقت 9 ذوالحجہ کو نماز ظہر کے بعد سے لے کر 10 ذوالحجہ کی طلوع فجر تک ہے، کوئی بھی شخص حالتِ احرام میں حج کی نیت سے ان اوقات میں ایک لحظہ یا اس سے زیادہ کے لئے عرفات میں داخل ہو جائے تو اس کا حج ہو جائے گا اور اگر کوئی شخص ان اوقات میں عرفات میں داخل نہیں ہوتا تو اس کا حج نہیں ہو گا۔

حضرت عبد الرحمن بن یعمر رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : حج وقوفِ عرفہ کا نام ہے۔

وَمَنْ اَدْرَکَ عَرَفَة قَبْلَ اَنْ يَّطْلَعَ الْفَجْرُ فَقَدْ اَدْرَکَ الْحَجَّ.

(ترمذی، الجامع الصحيح، أبواب القراء ت، باب ومن سورة البقرة، 5 : 84، رقم : 2975)

’’اور جس نے (مزدلفہ کی) طلوع فجر سے پہلے پہلے عرفات کے وقوف کو پا لیا اس کا حج ادا ہو گیا۔‘‘

Share: